ساجد محمود خان

کسی بھی جمہوری معاشرےمیں سیاسی آزادی بڑی اہمیت کی حامل ہوتی ہے۔ جس معاشرے میں جمہوری اقدار کمزور ہو جاتی ہیں، وہاں پر سیاسی آزادی کو اپنے مزموم عزائم کے لیے منفی انداز میں پیش کیاجاتا ہے۔ مثلاٰ اگرکوئی فرد کسی حکومتی پالیسی پر تنقید کرے تو اُسے غدار اور ملک دُشمن کا لقب دے دیا جاتا ہے۔ ایسے معاشرے میں سیاسی آزادی اور غداری جیسے تصورات میں فرق سمجھنا بہت ضروری ہے، خاص کر اُس معاشرے میں جہاں کافر، غدار اور ایجنٹ جیسے فتوے لگانا کوئی مشکل کام نہ ہو۔ شاید اسی لیے احمد فراز نے کہا تھا۔

پھر وہی خوف کی دیوار، تذبذب کی فضا

پھر ہوئیں عام وہی اہلِ ریا کی باتیں

نعرۂ حُبِ  وطن مالِ تجارت کی طرح

جنسِ ارزاں کی طرح دینِ خدا کی باتیں

جب کسی معاشرے میں ایک خاص طبقہ اپنے مزموم عزائم کے لیے لوگوں میں سیاسی شعُور کو ایک خاص سمت میں ڈیکٹیٹ کرتا ہے اور  جہاں اُن کے اندر اُٹھنے والے بنیادی سوالوں کو دبایا جاتاہے، تو ایسا معاشرہ ذہنی اور شعوری طور پر بانجھ پن کا شکا رہو جاتاہے۔ اور جب کوئی معاشرہ ذہنی پسماندگی کا شکار ہوتاہے تو پھر وہاں پر ارسطو ، افلاطون اور فرابی جیسے فلاسفرنہیں بلکے صرف شاہ دولا کے چوہے ہی جنم لیتے ہیں۔

آج ہمارے معاشرےکی حالت بھی کچھ زیادہ مختلف نہیں ہے۔آج بھی ہمارے معاشرے میں لوگوں کی سیاسی آزادی کودبایا جاتاہے۔ اُن کے جائزحقوق کے لیئے بولنے والوں کوڈرایا اور دھمکایاجاتاہے۔ وہ میڈیا جسے لوگوں کے حقوق کے لیے آواز اُٹھانا تھا آج اُسے ریٹنگ کی دوڑ سے فرصت نہیں ہے۔ ہمارا میڈیا دو گروپوں میں تقسیم ہوکر ایک نوازشات ( ن لیگ) دوسرا عمرانیات ( عمران لیگ )کی کوریج میں مصروف ہے۔ آج ہمارے ملک کے محتلف علاقوں میں لوگ اپنے بنیادی سیاسی اور انسانی حقوق کے لیئے مظاہرے کررہے ہیں اور چیخ چیخ کر پوچھ رہے ہیں کہ کیا یہ آزادی ہے؟ اور مجال ہے جو عوامی نمائندوں، میڈیا اور با اثر افرادکو کو ان لوگوں کی ایک بھی سسکی سُنائی دے۔ کتنے افسوس کی بات ہے کی یہ پارلئمنٹ انگریزوں کے بنائے ہوئے ایک قانون تک کو بھی نہ ختم کر سکی جس نے فاٹا کے عوام کا جنیا حرام کیا ہواہے ۔ا ب حکومت کے پاس دو ہی راستے ہیں۔ ایک تو وہ ان لوگوں کی آواز کو دبادیں یا پھر وہ ان کے ساتھ مزاکرات کر کے ان کے مسائل کا  کوئی دیرپا سیاسی حل تلاش کریں۔

اس حقیقت سے انکار نہیں کیا جا سکتا کہ دھشت گردی جیسے لعنت کو ختم کرنے کے لیئے حکومت کو غیرمعمولی اقدامات کرنے چاہییں۔ مگر ان غیر معمولی اقدامات کی آڑ میں لوگوں کے بنیادی انسانی حقوق کو سلب نہ کیا جائے۔لوگوں کو ان کے سیاسی حقوق سے محروم نہ کیا جائے۔ انسان کو زندہ رہنے کے لیے صرف ہوا، پانی اور خوراک کی ہی ضرورت نہیں ہوتی بلکے زندہ رہنے کے لیے انسان کو اور بھی بہت کچھ درکار ہوتا ہے۔ آج کا انسان صرف کسی حد تک پاپندیاں برداشت کر سکتا ہے اور  جب اُس کی برداشت کا پیمانہ لبریز ہو گا تو وہ احمد ندیم قاسمی کی ایک نظم کی طرح بولنے لگے گا۔

زندگی کے جتنے دروازے ہیں، مجھ پر بند ہیں۔

دیکھنا، حدِنظر سے آگے بڑھ کر دیکھنا جرم ہے۔

سوچنا ! اپنے عقیدوں اور یقینوں سے نکل کر سوچنا بھی جرم ہے۔

آسماں در آسماں کی پرتیں ہٹا کر جھانکنا بھی جرم ہے۔ کیوں بھی کہنا جرم ہے،کیسےبھی کہنا جرم ہے۔ سانس لینے کی تو آزادی ہے مگر

زندہ رہنے کےلئے انسان کو کچھ اور بھی درکار ہے اور اس کچھ اور کا بھی تزکرہ بھی جرم ہے۔

اے ! ہنرمندانِ آئین و سیاست، اے ! خداوندانِ ایوان و عقائد

زندگی کے نام پر بس اک عنایت چاہیے۔ مجھ کو اِن سارے جرائم کی اجازت چاہئیے۔

3540 COMMENTS

  1. Hi there, just became aware of your blog through Google,
    and found that it is really informative.
    I am going to watch out for brussels. I will appreciate
    if you continue this in future. Many people will be benefited from your writing.
    Cheers!

  2. Hello! I could have sworn I’ve been to this site before but after browsing through some of the articles I realized it’s new to me.
    Anyhow, I’m definitely delighted I found it and I’ll be bookmarking it and
    checking back regularly!

  3. I am really impressed with your writing skills
    and also with the layout on your weblog. Is this a paid theme or did you customize it yourself?
    Anyway keep up the nice quality writing, it’s rare to see a
    great blog like this one today.

  4. Write more, thats all I have to say. Literally, it seems as though you relied on the video to make your point.
    You obviously know what youre talking about, why waste
    your intelligence on just posting videos to your blog when you could be
    giving us something informative to read?

  5. Hi there! This blog post couldn’t be written much better!
    Going through this post reminds me of my previous roommate!
    He always kept preaching about this. I most certainly will send this post to him.
    Fairly certain he’ll have a good read. I appreciate you for sharing!
    cheap flights http://1704milesapart.tumblr.com/ cheap flights

  6. В Челябинске бойцовский пес насмерть загрыз пуделя: хозяин \бойца\” выплатит компенсацию”. Челябинск, Январь 20 (Новый Регион, Алла Александрова) – В Челябинске хозяин стаффордширского терьера выплатит компенсацию морального вреда хозяйке пуделя, которого бойцовский пес загрыз насмерть. Данный иск прокурора Тракторозаводского района на днях удовлетворил районный суд. Как сообщили

  7. Vrlo je jednostavno kupiti automobil na nasoj entanglement stranici https://wannabuycar.com. Imamo neporecive prednosti u odnosu na trzista automobila i druge net stranice koje postupak kupnje automobila mogu uciniti sto ugodnijim:
    – lako i brzo pretrazivanje automobila u gradovima;
    – najave o kupnji automobila s opseznim opisom;
    – kvalitetna usluga i korisnicka podrska;
    – automobil od vlasnika, a ne od preprodavaca.

  8. The initial place this 1 should keep away from visiting in a on line casino often is the ATM.

    Nonetheless one other place so as to keep away from within the on line casino often is the
    bar. Additionally, after you’ve determined to try out a fresh game he could easily
    get a inexperienced persons e book about the sport and take
    pleasure in it at a non-public dining table before seeking it out on the casino.

    Some individuals solely cannot maintain their consume, and it’s by no means
    good to own them by yourself desk. They’re disrespectful of the provider and
    might even indulge the temper of other folks for the day.
    These crooks may additionally take to to choose a number of
    your chips in case you are maybe not seeking, due
    to this fact all the time remain on alert and
    examine your chips. Nevertheless it is rarely an pleasurable information to get involved with a game with
    out understanding the foundations and etiquette of the game, and embarrassing oneself whereas the veterans
    at the sport are receiving labored up.

  9. Метод системных семейных расстановок.

    Системно-феноменологический подход Метод семейных расстановок по Берту Хеллингеру.
    Семейное консультирование и психотерапия.
    Метод системных семейных расстановок.

    Духовные расстановки. Метод семейных расстановок по Берту Хеллингеру.

  10. I am now not certain where you’re getting your information, however great topic. I must spend some time finding out much more or understanding more. Thank you for excellent info I was in search of this information for my mission.|

  11. Howdy! I could have sworn I’ve been to this web site before but after looking at many of the posts I realized it’s new to me. Anyways, I’m certainly happy I came across it and I’ll be bookmarking it and checking back often!|

  12. Свежие новости по игре Империя Пазлов. Мы собираем всё самое интересное по игре, переводим обновления и англоязычные новости и рассказываем вам про: исправления баланса; новых героев; новые сезоны; ежемесячные события и многое другое https://mobilepazzles.ru/

  13. Excellent weblog right here! Additionally your site a lot up fast! What host are you using? Can I am getting your affiliate link to your host? I wish my website loaded up as fast as yours lol|

  14. Write more, thats all I have to say. Literally, it seems as though you relied on the video to make your point. You obviously know what youre talking about, why throw away your intelligence on just posting videos to your weblog when you could be giving us something informative to read?|